Go to Top

بورڈ آف ڈائریکٹرز

ڈاکٹر شمشإد اختر

چیئرپرسن

ڈاکٹر شمشاد اخترمعروف ملکی اور بین الاقوامی اداروں میں ڈیولپمنٹ کے کاموں کا 37سالہ وسیع تجربہ حاصل ہے۔ آپ 2006سے 2009تک اسٹیٹ بینک آف پاکستان میں گورنر کے عہدے پرفائز رہیں اور اکنامک اینڈ سوشل کمیشن آف ایشیا اینڈ پیسفک (UNESCAP) کے انڈر سیکرٹری جنرل، اکنامکس اور فنانس کی سینئراسپیشل ایڈوائزر، اسسٹنٹ سیکرٹری جنرل یواین، یو این سیکرٹری جنرل کی G20 Sherpa اور ورلڈ بینک میں وائس پریزیڈنٹ، مڈل ایسٹ اینڈ نارتھ امریکہ (MENA)کی حیثیت سے خدمات انجام دے چکی ہیں۔ ایشین ڈیولپمنٹ بینک کے صدر کی سینئر اسپیشل ایڈوائزر بھی رہ چکی ہیں۔ 2018میں ڈاکٹر شمشاد اخترنے وفاقی وزیربرائے فنانس، ریوینیو، اکنامک افیئرز، اسٹیسٹکس ڈویژن، پلاننگ اینڈ ڈیولپمنٹ کے ساتھ ساتھ پاکستان کی کیئر ٹیکنگ گورنمنٹ میں انڈسٹری اور کامرس کے شعبہ جات میں بھی خدمات انجام دی ہیں۔

ڈاکٹر اختر نے مختلف سرکاری اور نجی شعبہ کے اداروں کو ڈیولپمنٹ، گورننس، غربت، نجکاری اور مختلف شعبوں میں پبلک پرائیویٹ پارٹنرشپس کے بارے میں مشورے بھی فراہم کئے ہیں۔ اسٹیٹ بینک آف پاکستان میں گورنر کے طور پر تعیناتی کے دوران میں آپ کو2006میں ایمرجنگ مارکیٹس گروپ کی جانب سے اور 2007میں بینکرز ٹرسٹ کی جانب سے ایشیا کی بہترین سینٹرل بینک گورنر کےلئے نامزد کیا گیا۔ آپ 2008میں ایشین وال اسٹریٹ جرنل کی ٹاپ ٹین ویمن بزنس لیڈرز کی فہرست میں شامل تھیں۔ ڈاکٹر شمشاد اختر ایک غیر منافع بخش کمپنی کارانداز کی چیئرپرسن بھی ہیں جوبنا بینک کھاتے کے افراد اور بنا معاون اداروں کو، خاص طور پر خواتین اور نوجوانوں کومعاشی ترقی اور ملازمتوں کی فراہمی کے ذریعہ مالیاتی امداد پر بھرپور توجہ دیتی ہیں۔ آپ ہارورڈ یونیورسٹی کے ڈپارٹمنٹ آف اکنامکس کی پوسٹ ڈوکٹورل فیلو اور یو ایس فل برائٹ اسکالر بھی رہی ہیں۔ آپ انتہائی قابل ڈاکٹر ہیں جنہوں نے یونیورسٹی آف پیسلے یو کے سے اکنامکس میں پی ایچ ڈی اور، یونیورسٹی آف سیسکس، یو کے سے ڈیولپمنٹ آف اکنامکس میں ڈگری کے ساتھ ماسٹر آف آرٹس اور یونیورسٹی آف اسلام آباد سے ایم ایس سی (اکنامکس) جبکہ یونیورسٹی آف پنجاب سے بیچلر آف آرٹس (اکنامکس) کی سند حاصل کی ہے۔

محمد رضی الدین منيم

ڈائریکٹر

محمد رضی الدین منیم ایک تجربہ کار ماہر پروفیشنل ہیں جوآئل فیلڈ سسٹمیٹک پرفارمنس مینیجمنٹ بشمول خاص طورپر QHSE اور ٹیم بلڈنگ میں 40 سال سے زیادہ تجربہ کے حامل ہیں۔ آپ نے کیریئر کا آغاز 1974 میں M-I Drilling Fluids/M-I Overseas Ltd. (بعد میںSCHLUMBERGER کا ایک ڈویژن بن گیا) سے کیا اور وہاں 2014 تک خدمات انجام دیتے رہے اور پاکستان کیلئے کنٹری منیجر اور سی ای او اور مشرق وسطیٰ کیلئے ایریا آپریشنز منیجر کے عہدہ سے ریٹائر ہوئے۔ اپنی مدت ملازمت میں آپ نے سالانہ اور سٹریٹجک بزنس پلانز کی پلاننگ اور نئی ٹیکنالوجیز پر عمل درآمدکی خدمات انجام دیں۔ آپ نے صنعت کے معروف ترین اداروں جیسے ایگزن، شیل، کونوکو، یونین ٹیکساس، پیٹروکینیڈا، برٹش پٹرولیم، OMV اورEni/Lasmo اورکئی اداروں کے ساتھ کام کیا۔ آپ کی خصوصی صلاحیتوں میں استعداد کی مینیجمنٹ، پروڈکٹ اینڈ سروس ڈیلیوری آپٹمائزیشن اور نیو آئل فیلڈ ٹیکنالوجیز شامل ہیں۔ اِن صلاحیتوں کے ساتھ انہوں نے خود کو کمپنی کاقیمتی اثاثہ ثابت کیا ہے؛ جومسلسل ان کے ٹھوس کاروباری دانشمندی، اچھی مہارت سے ظاہر ہے جس کے نتیجے میں بین الاقوامی لیڈنگ EBITDA اور ROI & QHSE کی رینکنگ حاصل ہوئی۔ آپ نے ایڈوانسڈ مینیجمنٹ اور ڈرلنگ انجینئرنگ کے کئی کورس کئے ہیں جن میں گفت و شنید کی صلاحیت، تحریک دلانے، سکھانے، QHSE لیڈرشپ اور مینیجمنٹ شامل ہے۔ نیز ڈرلنگ انجینئرنگ، مربوط مائعات انجینئرنگ اور ڈرلنگ سیال اقتصادیات کے متعدد کورسز شامل ہیں۔ آپ نے انٹر نیشنل پیٹرولیم سیمینارز میں مختلف پیپرزتحریر کئے اور SPE اور کئی انڈسٹریل پینل سیشنز کے شریک صدر رہے۔ آپ PICG کے ممبر اور سرٹیفایڈ بورڈ ڈائریکٹرہیں جو IFC کے ساتھ اشتراک رکھتی ہے۔ اس کے علاوہ آپ لسٹڈ کمپنیز بشمول پاک سوزوکی موٹر کمپنی اورگندھارا نسان لمیٹڈ میں بطور ممبر بورڈ آف ڈائریکٹر خدمات انجام دیں۔ آپ رضاکارانہ سماجی خدمات بھی انجام دیتے ہیں اور 13 سال سے اے کے یو ایچ کی پیشنٹس بہبود سوسائٹی کے چیئرمین رہے ہیں اور 2006 سے کمیونٹی ایڈوائزری بورڈ آف اے کے یو ایچ کے شریک صدر کے طور پرخدمات انجام دے رہے ہیں۔

جناب منیم نے یونیورسٹی آف انجینئرنگ اینڈ ٹیکنا لوجی، لاہور سے کیمیکل انجینئرنگ میں بی ایس ڈگری حاصل کی۔ وہ امریکن انسٹی ٹیوٹ آف کیمیکل انجینئرز، سوسائٹی آف پیٹرولیم انجینئرزکے لائف ممبر ہیں اور پیٹرولیم انسٹی ٹیوٹ آف پاکستان کے ممبر ہیں۔ مزید OICCI انرجی سب کمیٹی کے ممبر بھی تھے۔

نداء رضوان فريد

ڈائریکٹر

ندا رضوان فرید ایک ایرو اسپیس انجینئر اور انرجی ایفیشنسی کنسلٹنٹ ہیں۔ وہ ایئر بس A320, A330, A350XWB, A380اور بمبارڈئیر کے سی آر جے ایئر کرافٹ جیسے ملٹی ملین ڈالر منصوبوں کی قیادت کرچکی ہیں۔ آپ نارتھ امریکہ اور یورپ میں ونڈ فارم ڈیویلپمنٹ اینڈ مینجمنٹ، انرجی پالیسی اور گیس ٹربائن کمبشن پر بھی خصوصی طور پرکام کرچکی ہیں۔ محترمہ ندا رضوان فرید پاکستان اور دیگر مقامات پر انرجی ایفیشنسی کے بارے میں آگاہی فراہم کرنے کیلئے پرجوش ہیں اور پاکستان کیلئے انٹیگریٹڈ انرجی پلان کی شریک تحریرکار بھی ہیں۔ ان کے منصوبوں میں پاکستان کا پہلا جامع انرجی فلو ڈایاگرام، بجلی کے ذریعہ چلنے والی اپلائنسز کی ایک تقابلی ویب سائٹ savejoules.com، انرجی ایفیشنسی آگاہی مہم، اور ساتھ ساتھ تجارتی اور صنعتی صارفین کیلئے انرجی آڈٹس شامل ہیں۔ آپ میساچوسسٹس انسٹی ٹیوٹ آف ٹیکنالوجی (MIT) سے ایس بی ہیں اور ای ٹی ایچ زیورخ سے ایئر کرافٹ انجنز اور گیس ٹربائنز کی تخصیص کے ساتھ میکنیکل انجینئرنگ میں ایم ایس کیا ہے۔

فیصل بنگالی

ڈائریکٹر

جناب فیصل بنگالی ایک پروفیشنل فنڈ منیجر ہیں جو 20سال سے زیادہ کے تجربہ کے حامل ہیں۔ آپ پیوپل مینجمنٹ، ریگولیٹری معاملات، رسک مینجمنٹ اور فنڈمینجمنٹ کی کارکردگی کو بڑھانے میں ثابت شدہ مہارت رکھتے ہیں۔ آپ فنانشل مینجمنٹ کے دیگر پہلوﺅں بشمول بجٹ کی تیاری، سرمایہ کاری، مالیاتی تجزیہ اور ایسیٹ مینجمنٹ میں بھی ماہر ہیں۔ جون 2018سے آپ پی این او کیپیٹل کے ڈائریکٹر انوسٹمنٹ ہیں۔2004 سے 2008 تک آپ اے کے ڈی انویسٹمنٹ لمیٹڈ کے سی ای او رہے جہاں انہوں نے گولڈن ایرو اسٹاک فنڈکے انتظامی امور کی ذمہ داریاں سنبھالیں جو نجی شعبہ میں پاکستان کا قدیم ترین کلوزڈ اینڈڈ میوچل فنڈز ہے۔ 1994 سے 2004تک آپ اے کے ڈی سیکیورٹیز لمیٹڈ کے ڈائریکٹر رہے ۔اپنے کیرئیر کی ابتدا میں آپ بنگال فائبر انڈسٹریز کے نائب صدر تھے۔ جناب فیصل بنگالی نے رائس یونیورسٹی ہیوسٹن ٹیکساس سے ایم بی اے فنانس اور نارتھ ویسٹرن یونیورسٹی، الیونوائس سے الیکٹریکل انجینئرنگ میں بی ایس سی کیا آپ نے انسٹی ٹیوٹ آف چارٹرڈ اکاﺅنٹنٹ آف پاکستان سے سرٹیفائڈ ڈائریکٹر ٹریننگ پروگرام کی تربیت بھی حاصل کی ہے۔ جناب فیصل بنگالی کینیڈین سیکوریٹیز انسٹی ٹیوٹ کی جانب سے آفر کئے گئے کینیڈین سیکیورٹیز کورس میں بھی شرکت کرچکے ہیں۔

اڈاکٹر احمد مجتبیٰ میمن

ڈائریکٹر

ڈاکٹر احمد مجتبیٰ میمن کو حکومت ِ پاکستان کی جانب سے 5اپریل2018 کو ایس ایس جی سی ایل کا ڈائریکٹر مقرر کیا۔ اس سے پہلے آپ کی پوسٹنگ فنانس ڈویژن میں تھی۔ آپ نے Input Output Co-efficient Organization، ایف بی آر ، کراچی میں بطور ڈائریکٹر جنرل خدمات انجام دیں۔ آپ نے نومبر1987میں پاکستان کسٹمز اینڈ ایکسائز گروپ (موجودہ پاکستان کسٹمز سروس) میں شمولیت اختیار کی اور سینٹرل ایکسائز، سیلز ٹیکس، ویلوایشن، ایڈجو کیشن اور کسٹمز کے فعال شعبہ جات میں مختلف عہدوں پر کام کیا۔اس کے علاوہ ایشین ڈیولپمنٹ بینک کے ٹریڈ ایکسپورٹ پروموشن اینڈ انڈسٹریلائزیشن(TEPI) لون پروجیکٹ اور ایف بی آر میںTEPIکے سیکرٹری کی حیثیت سے خدمات انجام دیں۔آپ کا ایک وسیع پیشہ ورانہ اور اکیڈمک پس منظر کے حامل ہیں۔آپ کی تعلیمی قابلیت میں ایم بی بی ایس، ایم اے (اکنامکس) اور ایم بی اے فنانس شامل ہیں۔ آ پ مارچ 2018سے تا حال فنانس ڈویژن میں ایڈیشنل فنانس سیکرٹری (CF/HR)کے عہدے پر کام کررہے ہیں۔آپ نیس پاک اور کے الیکٹرک کے بورڈآف ڈائریکٹرز کے ممبر بھی ہیں۔

جناب شیرافگن خان

ڈائریکٹر

جناب شیرافگن خان نے ایچیسن کالج لاہور سے سینئر کیمبرج کی تعلیم مکمل کی۔ اس کے بعد لاہور امریکن اسکول سے ہائی اسکول ڈپلومہ مکمل کرنے کے بعد وہ یونیورسٹی آف سانتا کلارا، کیلی فورنیا، یو ایس اے سے بی ایس سی کے ساتھ گریجویشن کیا۔ 1989 میں انہوں نے پاکستان سول سروسز میں PAS/DMG گروپ میں شمولیت اختیار کی۔ ٹریننگ مکمل کرنے کے بعد اُنہوں نے مختلف اضلاع میں بطور اسسٹنٹ کمشنر، ایگزیکٹیو ڈسٹرکٹ آفیسر اور ڈسٹرکٹ کوآرڈینیشن آفیسر کام کیا اور سکریٹریٹ میں ہاﺅسنگ، زراعت اور ماحولیات کے محکموں میں ڈپٹی سیکریٹری اور ایڈیشنل سیکریٹری کی حیثیت سے کام کیا۔ انہوں نے سول سروسز اکیڈمی (ڈی ایم جی کیمپس) اور نیشنل اسکول آف پبلک پالیسی میں بطور فیکلٹی/ انسٹرکٹر بھی خدمات انجام دیں۔ اپریل 2018 میں پیٹرولیم ڈویژن میں شمولیت اختیار کرنے سے قبل، اُنہوں نے بطور ایڈیشنل سیکریٹری وزارت داخلہ میں بھی کام کیا۔ اس وقت آپ بطور ایڈیشنل سیکریٹری وزارت توانائی پیٹرولیم ڈویژن، پاکستان ایل این جی ٹرمینل لمیٹڈ (PLTL) ، پاک عرب ریفائنری لمیٹڈ (PARCO) اور سوئی ناردرن گیس پائپ لائن لمیٹڈ کے بورڈ کے رُکن ہیں۔

منظور علی شیخ

ڈائریکٹر
جناب منظور علی شیخ، BPS-20میں پاکستان ایڈمنسٹریٹیو سروس، وفاقی حکومت کے افسر ہیں، جو اس وقت اسٹیٹ لائف انشورنس کارپوریشن آف پاکستان میں ایگزیکٹیو ڈائریکٹر کے عہدے پر فائز ہیں۔ SLICمیں تعیناتی سے پہلے آپ وفاقی اور سندھ کی صوبائی حکومت میں مختلف حیثیتوں میں خدمات انجام دے چکے ہیں۔ ان کی گزشتہ تعیناتی حکومتِ سندھ میں لیبر اینڈ ہیومن ریسورسز ڈپارٹمنٹ میں بطور سیکریٹری تھی۔ آپ فاریسٹس اینڈ وائلڈ لائف ڈپارٹمنٹ میں بطورسیکرٹری فرائض انجام دے چکے ہیں۔ آپ نے ڈائریکٹر، ٹریڈ ڈیولپمنٹ اتھارٹی آف پاکستان، ایگزیکٹیو ڈائریکٹر، ٹریڈنگ کارپوریشن آف پاکستان اور ڈویژنل کمشنرسکھر ڈیویژن کے طور پر بھی خدمات انجام دی ہیں۔
جناب منظور علی شیخ نے 1994میں سول سروس میں شمولیت اختیار کی اور مختلف شعبہ جات، جیسے پبلک سیکٹر مینجمنٹ، ایڈمنسٹریشن، ٹریڈ اینڈ کامرس، پلاننگ اینڈ ڈیولپمنٹ، پاورٹی ایلیویشن اور کرائسس مینجمنٹ میں سینئر مینجمنٹ کے عہدوں پر کام کرنے کا وسیع پیشہ ورانہ تجربہ حاصل ہے۔ آپ نے کئی پروفیشنل ٹریننگ کورسز اور ورکشاپس میں شرکت کی جس میں پاکستان انسٹی ٹیوٹ آف کارپوریٹ گورننس (PICG) کی جانب سے منعقدہ گورننس آف رسک اینڈ ہیومن ریسورس اینڈریمونریشن کمیٹی شامل ہے۔ جناب منظور علی شیخ سول انجینئرنگ میں پروفیشنل ڈگری اورر اکنامکس میں بیچلرز ڈگری کے حامل ہیں۔

کیپٹن (ر)فضیل اصغر

ڈائریکٹر
کیپٹن (ر) فضیل اصغر جو پاکستان ایڈمنسٹریٹیو سروس میں PBS-21 کے آفیسررہے ہیں اور آجکل چیف سیکریٹری بلوچستان خدمات انجام دے رہے ہیں۔ کیپٹن (ر)فضیل اصغر سینئر سول سرونٹ ہیں اور انہوں نے وفاقی اور صوبائی سطح پر مختلف اہم انتظامی عہدوں پر ڈیوٹیز انجام دی ہیں۔
ان کے نمایاں عہدوں میں ڈپٹی سیکریٹری سی ایم سیکریٹریٹ پنجاب، ڈپٹی سیکریٹری گورنر سیکریٹریٹ پنجاب، ایڈیشنل سیکریٹری اور ایڈیشنل چیف سیکریٹری ہوم ڈپارٹمنٹ پنجاب، چیف کمشنر اسلام آباد، جوائنٹ سیکریٹری کیبنٹ ڈیویژن، ایڈیشنل سیکریٹری نیشنل سیکورٹی ڈیویژن اسلام آباد، اور ایڈیشنل سیکریٹری اے جے کے شامل ہیں۔
آپ نے آرٹیلری ریجمنٹ میں 8سال تک پاکستا ن آرمی میں بھی خدمات انجام دیں۔ آپ کو کھیلوں میں کافی دلچسپی ہے اور آپ کو پاک آرمی سے بطور بہترین باسکٹ بال پلیئر گولڈ میڈل بھی ملا۔

ڈاکٹر سہیل رضی خان

ڈائریکٹر

ڈاکٹر سہیل رضی خان اعلیٰ ترین کارپوریٹ کارکردگی کے ساتھ آئل اور گیس بزنس ڈیولپمنٹ مینجمنٹ کنسلٹنٹ ہیں جو آئل اور گیس کی صنعت میں منصوبہ بندی، ڈیولپمنٹ اور ترقی میں کامیابیوں کے ریکارڈ کے حامل ہیں۔آپ انتہائی محرک فرد ہیں اور یوکے، یو اے ای، کینیڈا اور قطر میں آئل اور گیس اور سروسز کی صنعت میں کامیاب بین الاقوامی ورکنگ کا 15سال سے زیادہ کا تجربہ رکھتے ہیں۔ آپ نے ٹوٹل (E&P)UK کے تمام آپریشنز میں حکمت عملی کی فراہمی کیلئے ٹھوس ٹریک ریکارڈ ورکنگ کی ہے جس میں آئل اور گیس کے پروسیسز(آپ اسٹیم اور ڈاؤن اسٹریم) پر عمل کرکے بزنس کی ڈیولپمنٹ میں بہتری لانا، متعلقہ انتظامیہ کی ٹیم کے ساتھ استعداد کی بہتری کی تیکنیکس پر عمل درآمد اور کوآرڈینیٹ کرنا شامل ہے۔ ٹوٹل (ای اینڈ پی) کیلئے چینج منیجمنٹ کنسلٹنٹ کے طور پر کام کرتے ہوئے یوکے اور قطر کے اثاثہ جات کیلئے 10ملین پاؤنڈز کے بجٹ کے اندرایف او آئی (فیلڈ آپریشنل امپروومنٹ) چینج منیجمنٹ پروگرام کو کامیابی کے ساتھ ڈیزائن کیا اوراس پر عمل درآمد کیا۔ فیلڈ آپریشنل امپروومنٹ پروگرام کا مقصد ٹوٹل پیٹرولیم (ای اینڈ پی) کو بزنس یونٹ سینٹرک سے انٹرپرائز، موثر اور سمجھداری پر مبنی سروس آئی ٹی ادارے میں دوبارہ تشکیل دینا تھا جو تمام آپریشنز کو ترجیحات مقررکرنے میں معاون ثابت ہو۔ آئل پروڈکشن رپورٹنگ پروسیسز کو کامیابی کے ساتھ ڈیزائن کیا اور ان پر عمل درآمد کیا، اہلیت پر مبنی انتظامیہ کے انتظامات، مربوط لاجسٹکس اور پروکیورمنٹ کے سسٹمز،12-24 ماہ کی پلاننگ اور بجٹنگ پروسیسز، حکمت عملی کے رخ کا تعین کرنے کیلئے کشیرالعمل اسٹیک ہولڈرزکے ساتھ کام کرنا اور بزنس ڈیولپمنٹ میں اضافہ شامل ہے۔ آپ اہلیت کے معیارات کے مطابق تمام امور اور اسٹاف کیلئے اہلیت کی شرائط کا تعین کرنے کے ذمہ دار بھی تھے۔ آپ نے کامیابی کے ساتھ سالانہ ٹریننگ پروگرام کا اہتمام کیا اور آپریشن، انجینئرنگ اور ایچ ایس ای ڈسپلن کی ضرورت کو بجٹ کے اندر اور بروقت پورا کیا۔

ڈاکٹر سہیل رضی خان کوپالیسی سازی، ایچ آرڈیولپمنٹ اور ٹریننگ، آڈٹ پروسیس، آئی ٹی کی حکمت عملی کی ڈیولپمنٹ اورآپریشن کو سپورٹ کرنے کیلئے مصنوعی ذہانت (ا ے آئی) کے استعمال کا وسیع تجربہ ہے۔ اس کے علاوہ big Data analytics،Cyber threat intelligence اورکلاؤڈ کمپیوٹنگ کے ذریعہ زیادہ سے زیادہ پروڈکشن حاصل کرنے اور آپریشنز کے دوران میں کاروبار کے طریقہ ء کار کی استعداد اور اس کو بہتر بنانے کی مہار ت حاصل ہے۔ آپ کو آئی بی ایم واٹسن ڈیٹا پلیٹ فارم کے ساتھ کام کا بھی وسیع تجربہ ہے جو آپریشنل اور کاروباری فیصلوں میں بہتری کیلئے ‘dark’ ڈیٹا کی بڑی تعداد کا تجزیہ کرکے ادارے کو حکمت عملی کی ویلیو فراہم کرتا ہے۔آئی پی ایس جی (یوکے) کیلئے کام کرنے سے آپ کو 10 ملین پاؤنڈز سے زیادہ کے بجٹ کے آئی ٹی پروجیکٹس کو مربوط کرنے، بشمول سافٹ ویئرڈیولپمنٹ، کاروباری طریقہء کار کی تشکیل ِ نو، پروسیس ڈیولپمنٹ، عمل درآمد، آڈٹ، کثیرالعمل شعبہ جات کو مرتب کرنے اورآئی ایس او اور یورپین معیارات کی پیروی کرنے کی خدمت انجام دیں۔

آپ کو ایک ساتھ کثیر نوعیت کے پراجیکٹس مربوط کرنے، بجٹ پر مختلف پروجیکٹ اسٹریمز کے ساتھ پروگرام کرنے کا وسیع تجربہ بھی ہے جوپی ایم آئی کے بہترین معمولات کے ساتھ PMBOK کے مطابق اسکوپ اور کوالٹی میں بھی مہارت حاصل رکھتے ہیں۔ ڈاکٹر سہیل رضی خان کو لیڈنگ منیجمنٹ ٹولز اور ٹیکنیکس جیسے Lean methodology، آراے سی آئی، Kanban، PRINCE 2، PMP ERP، IDE اور BPMاستعمال کرکے کمپنی کو قابل قدر آمدنی فراہم کرنے اور کمپنیزکے کاروبار کو نقصان سے نفع میں بدلنے کا تجربہ ہے۔

ڈاکٹر سہیل رضی خان نے مینیجمنٹ اینڈ ٹیکنالوجی میں پی ایچ ڈی کرنے کے بعد یونیورسٹی آف سینٹرل لنکاشائر، یو کے سے ایم بی اے (ماسٹر ان بزنس ایڈمنسٹریشن) کی سند حاصل کی۔ آپ نے یونیورسٹی آف ہرٹ فوڈ شئائر، یو کے سے ایم ایس سی (ڈسٹری بیوٹڈ نیٹ ورکس ایند سیکورٹی سسٹم) اور یونیورسٹی آف والور ہیمپٹن، یوکے سے اسٹریٹجک لیڈرشپ میں ایم اے کی ڈگری حاصل کی۔

آپ یونیورسٹی آف میری لینڈ،یونیورسٹی آف جارجیا، گوگل، Cisco and Cybrary Education یو ایس اے سےBig Data Analytic, Cyber Threat Intelligence, Management Ethical, Hacking Corporate IT Governance Framework، میں متعدد صنعتی سرٹیفکیٹس کے حامل ہیں۔ آپ نے کئی بین الاقوامی جریدوں میں کارپوریٹ آئی ٹی اسٹریٹجی اینڈ گورننس فریم ورک، منیجمنٹ چیلنجز، سائبر وارفیئر، کلاؤڈ کمپیوٹنگ اور سروس لیول فریم ورک کے موضوعات پر مضامین اور کتابیں لکھی ہیں۔

آپ کھیلوں کے بھی شوقین ہیں اور کرکٹ اور فٹبال آپ کے پسندیدہ کھیل ہیں۔

جناب زہیر صدیقی

ڈائریکٹر
جناب زہیر صدیقی 12 سال سروس کی مدت مکمل کرکے بطور مینیجنگ ڈائریکٹر سوئی سدرن گیس سے ریٹائر ہوئے۔ اس کے بعد مہارت اور قابلیت کی بنیاد پر آپ کو گیس ڈسٹری بیوشن میں اور ایل این جی پراجیکٹس سے متعلق ٹیکنیکل معاملات میں بورڈ کی مددکیلئے دو سال کے کنٹریکٹ پر دوبارہ آپ کی خدمات حاصل کی گئی ہیں۔ کمپنی میں سروس کی مدت کے دوران میں وہ مختلف سینئر لیڈرشپ عہدوں پر فائز رہے جس میں جنرل مینیجر (آئی ٹی)، سینئر جنرل مینیجر کسٹمر اینڈ مینجمنٹ سروسز، اور ڈپٹی مینیجنگ ڈائریکٹرکے عہدے شامل ہیں۔ اپنی سروس کے عرصہ کے دوران میں آپ بورڈ آف ڈائریکٹرز کی تمام کمیٹیز کے ممبر بھی رہے جو کمپنی کے وژن اور مشن کی تکمیل کے لئے اسٹریٹجک پلاننگ میں مصروف عمل تھیں۔ کمپنی میں ان کے عملی تجربے سے انہیں گیس پیوریفکیشن، ٹرانسمیشن اور ڈسٹری بیوشن فنکشنز سے متعلق انمول ٹیکنیکل اور انتظامی معلومات حاصل ہوئیں۔ ایس ایس جی سی جوائن کرنے سے قبل آپ10سال کے لئے سول ایوی ایشن اتھارٹیز، کراچی کے ملازم رہے، اور 11سال کی مدت کے لئے یو ایس اے میں اے ایم ڈی اور نیشنل سیمی کنڈکٹر کے ملازم رہے۔
جناب صدیقی نے کراچی سے الیکٹرونک انجینئرنگ میں بیچلرز کی ڈگری حاصل کی اور یو ایس اے سے کمپیوٹر انجینئرنگ میں ماسٹر ز کی ڈگری حاصل کی۔ وہ پاکستان اور یونائیٹڈ اسٹیٹس میں انجینئرنگ اداروں کے بھی ممبر رہے۔

جانب ایاز داؤد

ڈائریکٹر
جناب ایاز داؤد نے بطور چیف ایگزیکٹیو بی آ ر آر انویسٹمنٹ (پرائیویٹ) لمیٹڈ (مینیجر آف بی آر آر گارڈین مضاربہ)میں خدمات انجام دے رہے ہیں۔ آپ کو داؤد اسلامک بینک، داؤد فیملی تکافل، داؤد ایکویٹیز لمیٹڈ، فرسٹ داؤد انویسٹمنٹ بینک، داؤد کیپٹل مینیجمنٹ، فرسٹ داؤد میوچل فنڈ کے مینیجرز، داؤد منی مارکیٹ فنڈ اور داؤد اسلامک فنڈ کے بانی ہونے کااعزاز حاصل ہے۔ جناب داؤد نے مداربہ ایسو سی ایشن آف پاکستان میں بطور چیئر مین بھی خدمات انجام دیں۔ آپ سسٹمز لمیٹڈکے ڈائریکٹر اور آڈٹ کمیٹی کے چیئر مین ہیں۔ آپ ینگ پریزیڈنٹس آرگنائیزیشن کے ممبر ہیں، جناب داؤد نے میک گل یونیورسٹی، مونٹریال سے اکنامکس میں گریجویٹ کیا اور کولمبیا بزنس اسکول، نیو یارک سے امتیازی نمبروں کے ساتھ فنانس اینڈ منی اور فنانشل مارکیٹس میں ایم بی اے مکمل کیا۔


اہڈئٹڈؒ 21 بونبر 2019